Home » مرد کے جنسی مسائل

مرد کے جنسی مسائل

male-victim-111215_fa_rszdمرد کے جنسی مسائل
صحت اور جوانی دونوں ایک ایسی نعمت ہیں جس سے مرد کی زندگی کا صحیح لطف اور حقیقی مسرتیں حاصل ہو تی ہیں اگر صحت نہ ہو تو جوانی بیکار ہے۔ اس لئے صحت اور جوانی کی حفاظت ضروری ہے جوانی زندگی کا وہ سنہرا سفر ہے جس میں انسان اپنی آرزوں کو پورا کر تا ہے ۔ لیکن جوانی میں صحت کا ہونا بھی ضروری ہے۔ اگر صحت نہ ہو تو جوانی بیکا ر ہے لاعلمی کی وجہ سے اکثر لڑکے غلط راستے پر چل کر اپنی زندگی اپنے ہی ہاتھوں اور غلط سوسائٹی میں بیٹھ کر اپنے آپ کو برباد کر لیتے ہیں۔ اور جب وہ شادی کی منزل میں قدم رکھتے ہیں تو وہ اپنے آپ کو بیکار پاتے ہیں عورت کے نام سے گھبراتے ہیں ۔ جوانی اور زندگی کی لذت سے محروم رہتے ہیں۔
موجودہ وقت میں تناؤ بھری زندگی کی و جہ سے لوگو ں کی جنسی زندگی میں پریشانیوں کا ہونا عام بات ہوگئی ہے ، کئی بار ہمبستری کے دوران کسی وجہ سے غیر مطمئن ہونے یا ہمبستری سے دلچسپی نہ ہونے سے جنسی زندگی پر منفی اثر پڑتا ہے۔
عام طور پر یہ بھی مانا جاتا ہے کہ خواتین جنسی بیماریوں سے دوچار رہتی ہیں، لیکن ایسا نہیں ہے کہ مردوں میں جنسی امراض نہیں ہوتے۔ مردوں میں اکثر تناؤ سے متعلق پریشانیوں کے سبب جنسی مسائل ہوتے ہیں۔ وٹامن بی کے استعما ل سے مردکافی جنسی پریشانیوں سے اپنا بچاؤ کر سکتے ہیں۔
بہر حال آئیے جانتے ہیں مردوں کے جنسی امراض سے متعلق مسائل کے بارے میں۔
جنسی امراض سے متعلق مسائل
مردوں میں جنسی مسائل کی بات آتے ہی سب سے پہلے ان لوگو ں پر دھیان جاتا ہے جو چاہ کر سیکس میں دلچسپی نہیں لے پاتے ہیں یا جن کی سیکس کرنے میں کوئی دلچسپی نہیں ہوتی۔
(۱) ٹیسٹواسٹیرون کی کمی۔ قوت باہ میں کمی
مردوں میں قوت باہ میں کمی ایک عام مسئلہ بن چکا ہے اس کے حقیقی وجوہات ہوتے ہیں ، سیکس ہارمون ٹیسٹواسٹیرون کی کمی ۔ مردوں میں چالیس سال کی عمرکے پار ہونے پر خون میں ٹیسٹواسٹیرون کی مقدار میں کمی آنا ایک عام بات ہے۔ ہارمون میں کمی عمر کے ساتھ جڑی پریشانی ہے لیکن کچھ لوگ اپنی عمر کی شروعات میں ہی اس سے متاثر ہو جاتے ہیں ۔ یہ ذیابطیس یا دوسرے تناؤ سے متعلق وجوہات سے بھی بڑھ سکتا ہے۔ خون میں ٹیسٹواسٹیرون کی کمی سے جسم میں تھکان دماغی تبدیلی، بے خوابی کے ساتھ ہی جنسی چاہت میں کمی ہوجاتی ہے۔
(۲) سرعت انزال
جنسی مسائل میں سب سے اہم مسئلہ ہے مردو ں میں سرعت انزال ہے۔مردو ں کا عورت کے سامنے آتے ہی گھبرا جانا، منی نکل جاناوغیرہ بھی جنسی مسائل کے تحت ہی آتاہے۔ جس سے مرد ، عورت سے دُور بھاگنے لگتے ہیں اور اپنی بیماری کو چھپانے کی کوشش کر تے ہیں ۔ یا پھر جنسی تعلقات کے دوران مرد اِنزال ہونے کے ساتھ ہی مردکا جوش ٹھنڈا پڑ جاتا ہے۔چاہے ا سکی پارٹنر کا جوش ٹھنڈا نہ بھی ہو۔
(۳)کمزور عضلات
زیادہ ترلوگوں میں جنسی دلچسپی ختم ہونے کی سب سے بڑی وجہErectile Dysfunctionیعنی عضو تناسل کے عضلات کمزور پڑ جاتے ہیں ، یہ مسئلہ کئی بار وٹامن بی کے استعمال نہ کرنے سے ، کئی بار بُری عادتیں اور لائف اسٹائل کی وجہ ہو سکتی ہے۔ کئی لوگوں میں تناؤ سے متعلق پریشانیں کی وجہ سے ایسا ہو تا ہے۔
(۴) جنسی مایوسی
شراب پینے والوں ، کوکین وغیرہ ڈرگس لینے والے لوگ جنسی تعلقات کے تئیں مایوس ہوتے ہیں۔موٹاپا فرد کو جنسی تعلقات سے منحرف کرتا ہے۔ کئی بیماریاں جیسے امراض قلب، اینیمیا اور ذیابطیس جیسی بیماریاں بھی مرد کو جنسی تعلقات کے تئیں مایوس بناتی ہے۔ تناؤ سے متعلق پریشانی اور زیادہ مصروف رہنے والے لوگوں کی جنسی زندگی بھی مایوس کن ہو جاتی ہے۔
(۵)جنسی طاقت میں کمی
بہت سے لوگوں کو یہ بھرم ہو جاتا ہے کہ ایک عمر کے بعد جسم میں جنسی طاقت میں کمی آجاتی ہے ۔ لیکن یہ تصور غلط ہے کیونکہ اگر اس عمر کے مرد اپنے صحت کی صحیح طرح سے دیکھ بھال کرتے ہیں تو وہ جنسی تعلقات کا لطف اسی طرح سے لے سکتے ہیں ، جس طرح سے ایک نوجوان مرد جنسی تعلقات کا لطف لیتا ہے۔
(۶) دوائیوں کا استعمال
جنسی خواہش میں کمی کئی بار زیادہ دوائیوں کا استعمال کرنے ، جسم میں امراض کا اثر ہونے ،پیشاب کی نالی سے متعلق مرض ہونے، تناؤ ہونے اور ذہنی پریشانی کی وجہ ہو سکتے ہیں ۔بڑھتی عمر میں مردوں میں جنسی خواہش تیز ہوجانا بھی ایک مسئلہ ہے جس کی وجہ پروسٹیٹ غدود کا بڑھ جانا ہے۔
ہاشمی دواخانہ پر 85 سال سے کثرت سے مریضوں کا علاج کیا گیا ہے۔ اور اس کے اچھے نتائج سامنے آئے ہیں۔ ہم صحیح طور پر مریضوں کو ماہرطبیب کی ذریعہ سے اچھا علاج مریض کے افکار کو دورکرنے کی کوشش کرتے ہیں۔ اس کے علاوہ ہم مریضو ں کو وہ سہولیات دینے کی کوشش کر رہے ہیں جس وہ اپنی جنسی زندگی کو خوشگوار بناسکیں۔

Leave a Reply