Home » Depression

Depression

depression

Depressionڈپریشن ایک طرح کا ڈسرڈر ہے جس میں انسان اداسی محسوس کرتا ہے اور تمام سرگرمیوں میں اس کی دلچسپی کم ہو جاتی ہے. اس ڈسرڈر کے دوران بچوں اور نوجوانوں کا موڈ اُداس ہونے کے بجائے چڑچڑا ہو جاتا ہے. اس کے علاوہ، بھوک نہ لگنا اور نیند نہ آنا جیسے مسائل بھی پریشان کرتی ہیں.
اسی کے ساتھ توانائی لیول کم ہونے لگتا ہے، دل سودمند نہیں ہو پاتا، چھوٹے چھوٹے فیصلے لینے میں دقت ہوتی ہے اور برے خیالات پریشان کرتے ہیں. ذراسی بات پر من رونے کا کرتا ہے. ڈپریشن کے بڑھ جانے پر مایوسی، دلدل اور احساس جرم ذہن کو گھیرنے لگتا ہے. ایسے کیس میں اکثر خودکشی کے خیالات ذہن میں آتے ہیں اور مریض ایسا قدم اٹھانے سے ہچکچاتا نہیں ہے.

ایک ایسی بیماری ہے جس کے مریض آپ کے آس پاس سب سے زیادہ نظر آتے ہیں. آج کی تاریخ میں عام بیماریوں میں سے ایک ہے ڈپریشن. بچے، جوان اور بوڑھے ہر طبقے کے لوگ اس بیماری کے شکار ہیں. سبب سب الگ الگ ہو سکتا ہے پر علامات تقریباً ایک جیسے ہی ہیں۔
What is depression? What causes depression, Symptoms, Treatment کیا ہے ڈپریشن. کیسے ہوتا ہے ڈپریشن اور کیا ہیں اس کی وجوہات؟
دراصل ڈپریشن ایک ڈسرڈر ہے، جس میں اداسی کی روح کسی شخص کو دو ہفتے یا اس سے بھی زیادہ طویل وقت تک گھیرے رہتی ہے. اس سے لائف میں اس کی دلچسپیوں کم ہو جاتی ہے. اس میں منفی سوچ بھی آ جاتی ہیں۔کسی کام کے اچھے نتائج کی اسے بالکل امید نہیں رہتی۔
ڈپریشن میں کسی بھی انسان کو اپنا توانائی لیول مسلسل گھٹتا ہوا محسوس ہوتا ہے. اس طرح کے جذبات سے ورک پلیس پر کسی بھی انسان کی قابلیت پر اثر پڑتا ہے. اس کی روز مرہ زندگی بھی متاثر ہوئے بغیر نہیں رہتی. اس طرح کے ڈپریشن کو کلینکل ڈپریشن کہا جاتا ہے۔
Signs and symptoms of depression include ڈپریشن کی علامات
*لگاتار اداسی سے گھرے رہنا. بے چینی محسوس کرنا. کسی نہ کسی وجہ سے موڈ خراب رہنا.
*زندگی سے کوئی امید نہ ہونا. مایوسی۔
*اپنے آپ کو مجرم سمجھنا، ہر وقت زندگی کو بوجھ ماننا اور من پسند کام نہ کر پانے کی لاچاری محسوس کرنا.
*پسندیدہ کاموں میں دلچسپی نہ رہنا۔
*جسم میں توانائی لیول کم محسوس ہونا. ہر وقت تھکاوٹ کا جسم پر غلبہ رہنا۔
*نیند نہ آنا. علی الصبح نیند کھل جانا، یا بہت زیادہ نیند آنا۔
*بھوک کم لگنے سے مسلسل وزن گرنا. ضرورت سے زیادہ کھانے سے موٹاپا۔
*من میں خود کشی کے خیال آنا. خودکشی کی کوشش کرنا۔

Stressed Schoolboy with Head in HandsDepression in Children: Symptoms and Common Types of بچے بھی ڈپریشن کا شکار ہوتے ہیں۔
ایسا نہیں کہ ڈپریشن صرف مردوں یا عورتوں میں ہوتا ہے. بلکہ ڈپریشن کے شکار آج کی تاریخ میں بچے بھی ہو رہے ہیں. ایک ریسرچ کے مطابق اسکول جانے والے بچوں میں ڈپریشن کا معاملہ مسلسل زیادہ دیکھا جا رہا ہے. اور یہی وجہ ہے کہ بچوں میں خود کشی کا واقعہ پہلے سے بڑھا ہے. بڑی بات یہ ہے کہ بچوں میں ڈپریشن کی وجہ بہت چھوٹے چھوٹے ہوتے ہیں.والدین کی امیدوں پر پڑھائی میں کھرے نہ اترنا. گھر میں دو بچوں کے مقابلے سے کسی ایک بچے میں ڈپریشن آ جانا. ماں باپ کے آپسی تعلقات ٹھیک نہ رہنے سے بچے میں ڈپریشن آ جانا. یہ کئی اہم وجوہات ہیں بچوں کے ڈپریشن کا۔

DEPRESSION_2564917bDepression Symptoms and Signs in Womenخواتین زیادہ شکار
ایسا نہیں کہ ڈپریشن ناقابل علاج ہے۔ بس اس کے لئے ضروری ہے خود کو بہتر کرنا۔ ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ ڈپریشن کے شکار لوگوں میں اعتماد دوبارہ لوٹ آئے تو انہیں اس بیماری سے چھٹکارا مل سکتا ہے.
Depressionڈپریشن اگرچہ شروع میں سمجھ نہیں آتا ہو پر ایسا دیکھا گیا ہے کہ مردوں کے مقابلے خواتین کو یہ پریشانی زیادہ اور جلدی گھر کرتی ہے. موٹے اندازے کے مطابق 10 مردوں میں ایک جبکہ 10 خواتین میں ہر پانچ کو ڈپریشن کا خدشہ رہتا ہے. ایسا مانا جاتا ہے کہ مرد اپنا ڈپریشن قبول کرنے میں ہچکچاہٹ محسوس کرتے ہیں جبکہ خواتین دباؤ اور استحصال کے چلتے جلد ڈپریشن میں آ جاتی ہیں. یہ مسئلہ بڑے شہروں میں زیادہ تیزی سے پاؤں پسارتی جا رہی ہے. اگرچہ مندی کے اس دور میں نوجوانوں میں بھی ڈپریشن کے معاملے مسلسل اضافہ ہوا ہے. پر ان سب سے سے بڑی بات یہ ہے کہ کیا ڈپریشن کو آپ اپنے اندر سے مکمل طور پر ختم کر سکتے ہیں یا نہیں۔
ماہرین کی مانیں تو ڈپریشن Depressionکو ختم کرنے کا سب سے بڑا ہتھیار ہے اعتماد. اگر آپ اعتماد سے بھرپور ہیں تو یہ مان کر چلیں کہ آپ اپنے ارد گرد کو بھی مطمئن رکھیں گے. مطلب یہ کہ عدم اطمینان ڈپریشن کا ایک بڑا سبب ہے. عدم اطمینان کی وجہ سے آپ میں منفی سوچ پیدا ہوگی اور یہی آہستہ آہستہ ڈپریشن کی شکل لے لے گا. اس لئے ضروری ہے کہ آپ خود کو اعتماد برقرار رکھیں. توانائی لیول کم نہ ہونے دیں.
دوسری سب سے بڑی چیز ہے ہر حال میں خوش رہنا. ڈاکٹر کہتے ہیں کہ ہر حال میں خوش رہئے کیونکہ خوشی ہی ہماری صحت کو بنیادی ہے. ڈپریشن کی سب سے بڑی ٹانک ہے خوشگوار ماحول، اچھی باتیں۔
Depression ڈپریشن سے بچنے کا تیسرا بڑا طریقہ ہے اپنے طور طریقے میں تبدیلی۔ اپنے کام کرنے کے طریقے میں چھوٹی موٹی تبدیلی. مطلب یہ کہ اس دوران آپ اپنے ادھورے شوق کو پورا کرنے کی کوشش کریں. ٹارگیٹ بنائیں اور کسی کام کو مکمل کرنے کے چھوٹے چھوٹے ہدف مقرر کریں. ایسا کرنے سے ڈپریشن نہیں ہوگا. چھوٹے چھوٹے ہدف مکمل ہونے پر اعتماد بڑھتا رہے گا اور کشیدگی پاس نہیں آئے گا.
اس کے علاوہ اگر مسئلہ زیادہ لگے تو ڈاکٹر کے پاس جائیں. ڈاکٹروں کی طرف سے دی جانے والی تھراپی کا استعمال کریں. مگر ذہن نشین رہے ڈپریشن کو طویل قائم نہ رہنے دیں ورنہ یہ مہلک ہو سکتا ہے۔

Depression (mood) , depression, Symptoms, Treatment

Leave a Reply