Home » Women’s Sexual Desire

Women’s Sexual Desire

female-libido-enhancer1

 

1202298.largeSexual Problems in Women خواتین میں جنسی بیماری
ایک عورت کی جنسی خواہشات میں قدرتی طور پر گزشتہ چند سالوں سے اُتار چڑھاو ہو رہے ہیں ۔جنسی خواہش کا زیادہ اور کم ہونا عام حمل، سنیاس یا بیماری جیسے اہم مسائل یا آپ کے پارٹنر سے رشتے کی وجہ سے مختلف ہوتا ہے، تاہم، اگر آپ بیوی کی جنسی خواہش کے کم ہونے یا جنسی خواہش کے بالکل نہ ہونے سے پریشان ہو رہے ہیں تو کم جنسی ڈرائیو، والی زندگی میں تبدیلی کرنے اور جنسی خواہش کو زیادہ کرنے کی کئی ٹیکنالوجی ہے جو آپ کے پارٹنر کی جنسی خواہشات کو بڑھا سکتے ہیں. اور کچھ دوا?ے وعدہ بھی کرتی ہیں.
طبی الفاظ میں، آپ کوہائپواکٹیو جنسی خواہش کی خرابی کی شکایت ہے اگر آپ جنسی تعلقات میں دلچسپی کا ایک مسلسل یا دھیرے دھیرے کمی آ رہی ہے تو یہ انفرادی بحران کا سبب بن سکتی ہے۔کم جنسی شہوت مردوں کے مقابلے میں خواتین میں عام ہے. اصل میں خواتین40 فیصد سے زیادہ جنسی بیماری کی شکار ہوتی ہیں ،جبکہ مرد جو جنسی بیماری سے شکار تقریبا 30 فیصد ہیں جو کہ جنسی ڈرائیو کی کمی کی شکایت کرتے ہیں۔ لیکن یہ فرق کہاں سے آیا ہے؟ یہ مسئلہ مردوں کے مقابلے میں خواتین میں عام کیوں ہے؟ وجہ یہ ہے کہ خواتین میں جنسی خواہشات، مردکی جنسی خواہشات سے کہیں زیادہ پیچیدہ ہے. جبکہ مردجنسی خواہشات بنیادی طور پر جسمانی طور پر موجود ہوتا ہے جبکہ خواتین میں جنسی ڈرائیو جسمانی اور جذباتی دونوں طور پر متاثر ہو سکتے ہیں. اور دیگر کئی ?وجوہات سے بھی متاثر ہو سکتے ہیں، جسمانی عوامل تنوع اور بیماریوں، منشیات، جسمانی تبدیلی وغیرہ خواتین میں جنسی خواہشات کو کم کرنے کے لئے حوصلہ افزائی کرسکتے ہیں ۔
r-MEJORESORGASMOS-large570 Female genital disease بیماریاں
خواتین میں جنسی خواہش کم ہونے کی مندرجہ ذیل جسمانی وجوہا ت ہو سکتی ہیں:
خواتین میں جنسی خواہش کم ہونے میں کچھ بیماریاں بہت بڑی وجہ ہوتی ہیں جیسے،گردے کی بیماری، نیورولوجیکل، دل کی شریانوں کی بیماری، گٹھیا، ذیابیطس، کینسر، ہائی بلڈ پریشر، وغیرہ جنسی خواہش میں کمی ہونے کی بیماری کو جنم دیتے ہیں۔
Treatment of Female Sexual Dysfunction ادویات۔
کئی ادویات کے منفی اثرات جنسی خواہش پر پڑتے ہیں ، جیسے اینٹی ڈپریجڈ، اینٹی سائیکوٹک ، کیمیکل طبی دوائی وغیرہ کو جنسی خواہش پر اثر ڈالنے والا سمجھا جاتاہے۔
شراب اور منشیات کے غلط استعمال۔
بہت زیادہ شراب یا منشیات لینے سے آپ اپنی جنسی خواہش کو مار سکتے ہیں۔
موٹاپا یا غذا۔
جو عورتیں موٹی ہیں یا انورکسیا سے متاثر ہیں (یا شدید طورپر وزن کے مسئلے سے متاثر ہیں) انہیں کچھ جنسی ہارمونز اور جنسی دلچسپی میں کمی ہو سکتی ہے۔
سرجری۔
چھاتی سرجری یااندامِ نہانی سے متعلق سرجری جنسی خواہش کو متاثر کر سکتی ہیں۔
تھکاوٹ۔
حقیقت میں تھکاوٹ سے جنسی خواہشات میں کوئی دلچسپی نہیں رہتی۔
درد یا جنسی تعلقات کے دوران تکلیف۔
اگر کسی عورت کو جنسی تعلقات کے دوران درد کا احساس (Dyspareunia) یا (Anorgasmia) ہوتا ہے تو یہ جنسی تعلقات کے لئے آپ کی خواہش کو مار سکتا ہے.
Changes in sexual functioning ہارمون تبدیلی۔
ہارمون کی سطح میں تبدیلی سے بھی جنسی خواہش بدل جاتی ہیں۔یہ خاص طور پر ایک عورت کی زندگی میں کچھ وقت کے لئے جنسی خواہش کو کم کر سکتا ہے۔
کشیدگی اور تشویش۔
جسم کی شبیہ یا احساسِ کمتری۔
Sexual Problems in Womenرشتے کے مسائل۔
ماضی یا موجودہ جسمانی یا جذباتی بدسلوکی۔
جنسی استحصال یا عصمت دری ۔
مخفی ہم جنس پرستی۔
Increasing Women\’s Sexual Desire باقاعدہ علاج۔ جنسی خواہش کو بڑھانے کا بہترین علاج۔
خواتین کی تکلیف کو ختم کرنے اور انہیں نفسیاتی خواہشات کو پورا کرتے ہوئے خوشگوارزندگی گذارنے میں مددملتی ہے۔ ازدواجی کشیدگی کو ختم کرنے میں جنسی خواہشات کی کمی دور کرنا ہی ایک اہم رول ہو تا ہے۔ 85سالوں کے ہاشمی دواخانے کے بے شمار تجربات ومریضوں کی تشحیض سے یہ ثابت ہو چکا ہے کہ عورتوں میں جنسی خواہش کم ہو یاپھر مردوں میں اس طاقت کی کمی ہو جو عورتوں کو تسلی نہ دے سکے۔ دونوں ہی چیزیں ازدواجی زندگی میں خطرناک موڑ لا سکتی ہیں۔
ہاشمی دواخانہ نے ان تمام مسائل پر تحقیق کر نے کے بعد جس طرح سے مرد وخواتین کے اس پیچیدہ مسئلے کو حل کر دیا ہے وہ قابل تعریف ہے۔

Herbal-medicine,-नपुंसकता-या-नामर्दी,Male-Enhancement,Sexual-desire - Copy

Leave a Reply