Home » Male Sexual Problems

Male Sexual Problems

مردانہ کمزوری کی ہے

مردانہ کمزوری کی ہے؟ مردانہ کمزوری سے مراد خوبی اور قو ت کا کم ہو جانا ہے جو عورت کی جنسی تسکین کے لئے ضروری ہے یعنی جب مرد کو شہوت نا آئے یا اس کی شہوت کم ہو جائے تو اسے مردانہ کمزوری کہا جائیگا۔مردانہ کمزوری کئی طرح کی ہوتی ہے مشلاً بعض مرد ایسے ہوتے ہے جنہے جنسی فعل سے دلچسپی ہی نہی ہوتی ۔یعنی وہ فوراً ڈسچارج ہو جاتے ہے۔ لیکن فوراً ہی عضو تناسل ڈھیلا ہو سکتا ہے۔ اس کے بر عکس کچھ مریضوں کو شہوت تو تھیک آتی ہے۔ لیکن فوراً ہی عضو تناصل ڈھیلا ہو کر سکڑ جاتا ہے۔ اس کے بر عکس کچھ مریضوں کو شہوت تو پوری آتی ہے۔لیکن عضو میں سختی نہیں ہوتی اور وہ ڈھیلا اور نرم رہتا ہے ۔ ان کیفیات کی موجودگی میں مرد مباشرت کے قابل نہیں رہتا جس کے نتیجہ میں اس کی زندگی پھیکی ہو جاتی ہے۔ جو مرد عورت کی جنسی تسکین نہیں کر پاتاعورت کی نظر میں حقیر و رسواں ہو جاتا ہے۔ اور اس کی ازدواجی تلخیوں کے سوا کچھ نہیں رہتا۔ مردانہ کمزوری کی وجوہات مندرجہ ذیل ہیں۔ *شوگر کی وجہ سے ہونے والی مردانہ کمزوری * بلڈ بریشر وجہ سے ہونے والی مردانہ کمزوری *امراض قلب کی وجہ سے ہونے والی مردانہ کمزوری * مشت زنی، اغلام،احتلام کی وجہ سے ہونے والی مردانہ کمزوری * چھوت دار بیماری کی وجہ سے ہونے والی مردانہ کمزوری * غلاط ادویات کی وکہ سے ہونے والی مردانہ کمزوری * ادھیڑ عمر کی وجہ سے ہونیوالی مردانہ کمزوری * نشہ آور چیزوں سے ہونے والی کمزوری۔

مردانہ کمزوری د’ور

مردانہ کمزوری د’ور ۔۔۔۔جنسی قوت بھرپور

یہ بات قابل فخر ہے کہ دنیا کے تمام طریقہ ہائے علاج اس بات پر متفق ہیں کہ طب یونانی کے علاوہ ان بیماریوں کا علاج کسی اور کے پاس نہیں ۔مردانہ امراض خاص جسم کو گھن کی طرح اندر ہی اندر کھوکھلا کر دیتے ہیں ۔ سستی ،غنودگی ، چڑچڑا پن، بیزاری اور گوشہ نشینی مریض پر حاوی ہو جاتی ہیں ۔اس بیماری کا سب سے بڑا اور برا اثر خاندان پر پڑتا ہے۔ مرد کی مہلک بیماریاں خاندان اور ازواجی زندگی میں تلخیاں بھرنے کا سبب بنتی ہیں، اور بعض اوقات نوبت طلاق پر پہنچ جاتی ہے۔

مردانہ-کمزوری-کی-ہے

Leave a Reply